وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال


وزیر اعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نے کہا ہے کہ چمن معاملہ پرمکمل تفتیش اورتحقیقات ہوں گی۔

جن عناصرنےناخوشگوارماحول پیداکیا انہیں سامنےلایاجائےگا، عجیب معاملہ ہے کہ پاکستانی حکام اپنےسرحدی امورکےذمہ دارہیں لیکن فائرنگ افغانستان سےہوتی ہے۔

تفصیلات کے مطابق مائیکرو بلاگنگ ویب سائٹ پر ٹویٹ کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ بلوچستان سردار جام کمال خان نے کہا کہ چمن معاملہ پرمکمل تفتیش اورتحقیقات ہوں گی،جن عناصرنےناخوشگوارماحول پیداکیا۔ انہیں سامنےلایاجائےگا۔ انہوں نے کہا کہ تمام معاملےکےپیچھےوہی عناصرہیں، جنہوں نےلوٹ مارکےلیےپیسہ استعمال کیا۔

تحریک انصاف حکومت کی داخلی سلامتی پر کوئی پالیسی نہیں، جس کے نتیجے میں۔۔۔احسن اقبال نے تشویشناک خدشے کا اظہار کردیا۔

محنت کشوں کوان عناصرکی جانب سےاُکسا کرجمع کیاجاتا ہے۔ ایک ہجوم کوسرحد پر جمع کیاجاتا بہے۔ یہ عجیب معاملہ ہے کہ پاکستانی حکام اپنےسرحدی امورکےذمہ دارہیں لیکن فائرنگ افغانستان سےہوتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ مزدوروں کو ان گروہوں نے بھڑکایا جن کے مفادات کو 2 مہینوں سے نقصان پہنچ رہا تھا۔ نان کسٹم پیڈ اشیا پر پابندی سے بہت سے گروہوں کو شدید پریشانی تھی اور اسی ان عناصر نے اپنے مذموم مقاصد کے لئے غریب مزدوروں کو استعمال کیا۔ یہی عناصر پس پردہ رہ کر ایسی کارروائیوں کے لئے لوٹ مار کا پیسہ استعمال کر رہے ہیں لیکن حکومت بلوچستان پر عزم ہے اور کسی کو بھی بلوچستان میں عدم استحکام پیدا نہیں کرنے دے گی۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *