ڈھائی ہزار سال قدیم 14تابوت برآمد


مصر کے محکمہ آثار قدیمہ کے ماہرین نے کھدائی کے دوران ڈھائی ہزار سال قدیم لکڑی کے چودہ تابوت برآمد کرلیے

بین الاقوامی میڈیا رپورٹ کے مطابق مصر میں کھدائی کے دوران ڈھائی ہزار سال قدیم 14 تابوت دریافت ہوئے، قدیم اشیاء کی تلاش کے لیے کھدوائی کا آغاز گزشتہ ہفتے ہوا تھا جہاں سے ماہرین کو 13 لکڑی کے تابوت ملے تھے۔

محکمۂ آثار قدیمہ کے ماہرین نے لکڑی کے 13 تابوت ملنے کے بعد مزید کھدائی جاری رکھنے کا فیصلہ کیا جس کے بعد گزشتہ روز مزید چودہ تابوت دریافت ہوئے جن کے بارے میں بتایا گیا ہے کہ یہ ڈھائی ہزار سال قدیم ہے۔

مصر کی وزارت نوادرات نے اعلان کیا ہے کہ سقارہ کے علاقے میں قدیم مقبروں سے 14 تابوت دریافت کیے گئے ہیں جو ڈھائی ہزار سال سے وہاں دفن تھے، یہ مقبرے دو روز قبل کھدائی کے دوران دریافت ہوئے تھے۔

اعلامیے میں بتایا گیا ہے کہ دریافت ہونے والے لکڑی کے تابوتوں کو اچھی طرح محفوظ بنایا گیا تھا۔

اس ضمن میں دریافت ہونے والے تابوتوں کی تصاویر بھی جاری کی گئیں جن میں دیکھا جاسکتا ہے کہ ان پر عنابی اور نیلے رنگوں کی لائنوں سے خوبصورت لیکن پیچیدہ کندہ کاری کی گئی تھی علاوہ ازیں نقش و نگار بھی بنائے گئے ہیں۔

قاہرہ کے جنوب میں واقع سقارہ ایک وسیع شہر خموشاں ہے جو کبھی میمفس کے قدیم دارالحکومت میں شامل تھا۔

عالمی ادارے یونیسکو کی جانب سے اس شہر کو عالمی ثقافتی ورثہ قرار دیا گیا ہے کیونکہ یہاں پر بھاری بھرکم مستطیل نما اہرام مدرج بھی موجود ہے۔

 



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *