سعودی ائیر پورٹ


سعودی عرب میں کورونا کی وبا کے بعد ہزاروں پاکستانیوں کو بغیر تنخواہ کے رخصت دے دی گئی ہے یا انہیں نوکریوں سے فارغ کر دیا گیا ہے۔

یہ پاکستانی فوری طور پر وطن واپسی کے منتظر ہیں، جن کی خاطر پی آئی اے کی جانب سے خصوصی پروازوں کا سلسلہ جاری ہے۔ یکم مئی سے سعودی عرب سے122 خصوصی پروازوں کے ذریعے 24 ہزار سے زائد پاکستانیوں کی واپسی ہو چکی ہے۔

ریاض میں واقع پاکستانی سفارت خانے کے مطابق جدہ اور مدینہ سے پی آئی اے کی57 جبکہ ریاض اور دمام سے 65 خصوصی پروازوں کے ذریعے 25 ہزار کے لگ بھگ پاکستانیوں کی واپسی ہوئی ہے۔گزشتہ دوروزکے دوران پی آئی اے کی چھ پروازوں سے ایک ہزار سے زائد پاکستانی وطن واپس پہنچ گئے۔

سعودی مملکت سے لاہور کے لیے 29پروازوں سے 6,898، اسلام آباد کی 35 پروازوں سے 7,608، کراچی کی 14 پروازوں سے 2,844، ملتان کی 19 پروازوں سے 3,370، پشاور کے لیے 15 پروازوں سے 2,540، فیصل آباد کی 6 پروازوں سے 840، جبکہ سیالکوٹ کی 5 پروازوں سے 700 مسافروں کی واپسی ہوئی ہے۔

سفارت خانے کے مطابق سعودی ایئر لائنز کی جانب سے بھی پاکستان کے لیے ہر ہفتے چار سے پانچ فلائٹس چلائی جا رہی ہیں، مگر ان کے ذریعے پاکستان جانے والے مسافروں کی گنتی کا ریکارڈ دستیاب نہیں ہے۔ واضح رہے کہ پی آئی اے کی جانب سے سعودی عرب سے پاکستان کے تمام شہروں کو جانے والی پروازوں کا کرایہ فکس کر دیا گیا ہے۔ جس کے بعد اسلام آباد، لاہور، پشاور، فیصل آباد، کراچی اور ملتان کے لیے ٹکٹ کرایہ ایک جیسا ہی ہو گا۔

سعودیہ میں قائم پاکستانی سفارت خانے کی جانب سے اعلان کیا گیا ہے کہ اکانومی کلاس کا یک طرفہ کرایہ 1,816ریال جبکہ سپیشل اکانومی کا کرایہ 2,182 ریال مقرر کیا گیا ہے۔ سفارت خانے کی جانب سے مزید کہا گیا ہے کہ اگر کوئی ٹریول ایجنٹ ٹکٹ کے بدلے میں فکس ریٹ سے زیادہ رقم کا مطالبہ کرے تو اس کی اطلاع فوری طور پر پاکستانی سفارتخانے یا پی آئی اے دفتر کو دی جائے۔

پاکستانی سفیر راجا علی اعجاز نے بھی اپنے ایک پیغام میں کہا تھا کہ اگر کسی پاکستانی کو لگتا ہے کہ اسے PIA کی ٹکٹ مہنگے داموں بیچ جا رہی ہے تو وہ مجھ سے براہ راست 0599558311پر رابطہ کر لے۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *